Page Nav

HIDE

Grid

GRID_STYLE

Classic Header

{fbt_classic_header}

Breaking:

latest

I Will Accepted Israel | Pak vs Israel

  میں اسرائیل کو تسلیم کرتا ہوں  اسرائیل فلسطین کو ہمارے مسلم بھائی بہن کو بیت المقدس جو حق ہے وہ واپس کرے فلسطین کے خلاف - مسلمانوں کے خلاف...

 


میں اسرائیل کو تسلیم کرتا ہوں 

اسرائیل فلسطین کو ہمارے مسلم بھائی بہن کو بیت المقدس جو حق ہے وہ واپس کرے

فلسطین کے خلاف - مسلمانوں کے خلاف بکواس کرنا بند کرے 

اور اسرائیل پہلے یہ تسلیم کرے کہ مینے فلسطین پر اور مسلمانون پر آج تک ظلم کیے ہیں

پھر کبھی ایسا نہیں ہو گا-

اسرائیل تسلیم کرے کے مینے فلسطین کی زمین پر ناجائز قبضہ کیا ہے۔

پھر میں اسرائیل کو تسلیم کرتا ہوں کہ اسرائیل یہودی ہے۔کافر ہے مسلمان کا دشمن ہے۔

اسرائیل کو بس اس حد تک تسلیم کرتا ہوں کہ ان کافروں کے ساتھ تجارت کرنا جائز ہے- جیسا کہ مکہ اور مدینہ میں آپ رسول ص-اور صحابہ ر-  کافروں کے ساتھ تجارت کرتے تھے۔ مگر اسرائیل مسلمان کا دشمن ہی رہے گا - قرآن میں اللہ فرماتا ہے کافر تمہارے کبھی دوست نہیں ہو سکتا جب تک کہ تم ان جیسے نہ بن جائو ۔ اگر  اسرائیل فلسطین کے مسلمانوں یا پھر دوسرے کسی ملک ک مسلمانوں پر ظلم کرتا ہے تو ان کے ساتھ علانیں جنگ ہی رہے گا-

 دو باتیں بس اور۔۔۔

قرآن و حدیث میں ہے - جب مکہ سے کافروں نے آپ رسول ص کو مکہ سے نکال دیا تو اللہ نے آیات نازل فرمائی اے نبی ص ان کافروں کو بھی یہاں سے نکال باہر کرو جیسا کہ انہوں نے آپ ص کو مکہ سے نکالا ہے۔

آپ ص نے فرمایا کافروں - اور کسی بھی غلط کام کے خلاف ہمیشہ جہاد کرو مطلب غلط کو غط ہی کہو - اپنے مال سے جہاد کرو، طاقت سے جہاد کرو، اپنی زبان سے جہاد کرو، اگر اتنی طاقت نہیں یا کسی کا خوف ہے کم سے کم اس کو دل میں ہی برا جان کے جہاد کرو - 

No comments

close